Let we struggle our way

Posts Tagged ‘footbaal’

بلوچ-فٹبال – بل فائٹنگ

In Baloch genocide, war game on January 7, 2011 at 2:12 pm

بلوچ-فٹبال – بل فائٹنگ

تحریر نواز بگٹی

بلوچستان اور خصوصاً مکران میں فٹبال کا کھیل شاید لوگوں کے جینز میں شامل ہے – لیکن بہت کم کسی نے دھیان دیا ہو گا کہ اس پورے کھیل میں سب سے زیادہ بیچارے فٹبال ہی کی درگت بنتی ہے – فٹبال دونوں جانب کے کھلاڑیوں کی تمام تر جارحیت کے باوجود کوئی شکایت کیے بنا تماشائیوں کی تفریح طبع کا سامان پیش کرتا ہے – اس پورے کھیل میں ریفری بھی غیر جانبدار ہونے کے باوجود فٹبال سے کوئی ہمدردی رکھنے کی بجاۓ ، خستہ و دریدہ فٹبال کو میدان ہی سے باھر کروا دیتا ہے –
بعینہ بلوچستان میں جاری جدوجہد آزادی کے پس منظر میں بلوچوں پر ہونے والے ظلم و ستم سے لطف اندوز ہوتی پنجابی اقوام بشمول میڈیا ،دونوں ٹیموں ( سرکاری افواج اور پنجاب پرست سیاست دان ) کے جان لیوا ٹھڈے کھاتی  بلوچوں سے فٹبال کی سی خاموشی کی آس لگاۓ بیٹھے ہیں  – اور انکی یہ امید کچھ غلط بھی نہیں ، تفریح کی خاطر چند ہزار نا کارہ ، جاہل ، اجڈ ، گنوار بلوچ نوجوان اگر اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھتے ہیں تو کونسا آسمان ٹوٹ گرتا ہے – یا پھر غلام بلوچ اقوام کی کچھ سو بچیوں کو جنسی غلام بنا کر آقاؤں کی خوشی حاصل کی جاتی ہے تو کیا زمین پھٹ جاۓ گی، جو اس قدر شور و غوغا برپا کیا جاۓ کہ تماشائی ٹھیک طور سے کھیل کا لطف بھی نہ اٹھا پائیں -ریفری کا کردار ادا کرنے والی عالمی اقوام بھی شاید فٹبال کے میدان کے  ریفری سے بڑھ کر کوئی کردار سنبھالنے کے لیے تیار نہیں ہیں، انھیں بھی تماش بینوں کی تفریح سے بڑھ کر کوئی غرض نہیں  – پھر بھلا ان بلوچوں سے کوئی پوچھے کہ تم ایسے نا ہنجار کس طرح  کہتے ہو کہ بلوچوں سے کسی کو کوئی لگاؤ نہیں  اور کس نے کہہ دیا کہ  بلوچ عزیز نہیں ؟ کیا آپ لوگوں کو نہیں معلوم کہ فوٹبالر کو اپنے فٹبال سے کتنا لگاؤ ہوتا ہے ؟ وہ تو اسے رنگ برنگے جالوں میں حفاظت سے سجا کر رکھتا ہے ، تاکہ کھیل کے دوران وہ ایک بڑھیا فٹبال سے بہتر کھیل کا مظاہرہ کر سکے –
کیا بلوچ اپنے فٹبال کے مجوزہ کردار پر راضی با رضا ہیں؟ شاید نہیں ، شاید بلوچ اس خونی کھیل کو فٹبال سے زیادہ ، سپین کی معروف سانڈوں کی لڑائی / بل فائٹنگ سے قریب تر سمجھتے ہیں ، جس میں بلوچ میدان کار زار کے تمام لوازمات نظر آتے ہیں – ایک طاقتور سانڈ ، اس کے مقابلے میں با صلاحیت تربیت یافتہ بل فائٹر اپنی تمام تر جارحانہ حربوں ، دھوکے بازی کا چالوں سے لیس ، چند مددگار کہ جن کا فرض سانڈ کے بپھر نے کی صورت میں اسے مد مقابل کی جانب سے غافل کرنے  کے لئے اسکا دھیان بٹانا ہوتا ہے ، اور ریفری و تماشائی ہر میدان کی طرح اس کھیل کا بھی لازمی حصّہ ہوتے ہیں -اب بلوچستان میں معصوم لیکن طاقتور سانڈ کا کردار بلوچ کو دیا گیا ہے جبکہ روایتی حریف یعنی بل فائٹر پنجابی افواج ، اور دھیان بٹانے کے لئے نام نہاد حقوق اور صوبائی خود مختاری کے سرخ جھنڈے لہرانے والے قوم پرست پارلیمانی سیاست دان اپنا کام بخوبی انجام دے رہے ہیں- ریفری کا فطری کردار عالمی اقوام کے ہاتھوں میں ہے لیکن بل فائٹنگ رنگ کی طرح انکی ہمدردیاں بھی بل فائٹر کے ساتھ اور کوشش تماش بینوں کو بہترین تفریح فراہم کرنا ہے – تماش بین پنجابی پنجابی اقوام کو اپنی تفریح طبع کے خاطر اپنے فائٹر کو ہمیشہ جدید تربیتی مواقع فراہم کرنے کی فکر لاحق ہوتی ہے – لیکن کیا بنتا ہے جب یہ معصوم سانڈ منتظمین کی تمام تر انتظامات کی پرواہ کیے بغیر بپھر کراپنی طاقت کا مظاہرہ کرتے ہوۓ  فائٹر ، ریفری ، اور مددگار وں کے ساتھ ساتھ تماشایوں کو بھی روند ڈالتا ہے

Advertisements